fbpx

سینیٹ الیکشن میں وزیراعظم کا اپنی "اے ٹی ایم” بچانے کا فیصلہ

سینیٹ الیکشن میں وزیراعظم کا اپنی "اے ٹی ایم” بچانے کا فیصلہ

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سینیٹ الیکشن کے لئے تاریخ کا اعلان ہو چکا ہے،سیاسی جماعتوں میں امیدوار فائنل کرنے کے لئے اجلاس جاری ہیں

تحریک انصاف نے بھی کچھ امیدوار فائنل کئے ہیں، وفاقی وزیر فواد چوھدری نے انکشاف کیا ہے کہ تحریک انصاف نے کراچی سے رکن قومی اسمبلی فیصل واوڈا کو سینیٹ کا ٹکٹ دینے کا فیصلہ کیا ہے

فیصل واوڈا رکن اسمبلی ہیں اور انکے خلاف الیکشن کمیشن آف پاکستان، اسلام آباد ہائیکورٹ میں نااہلی کی درخواستیں زیر سماعت ہیں جہاں وہ پیش نہیں ہو رہے، عدالت کئی بار طلب کر چکی ہے لیکن ہر تاریخ پر کوئی نہ کوئی بہانہ بنا دیا جاتا ہے

اسلام آباد سے صحافی عمران محمد کا کہنا ہے کہ شاید فیصل وڈا کو قومی اسمبلی کی نشست سے نااہلی کا یقین ہے اس لئے وہ سینیٹ کے امیدوار بن گئے ہیں ۔۔ فیصل وڈا کیخلاف اسلام آباد ہائیکورٹ اور الیکشن کمیشن میں کیس زیر سماعت ہے اور پیش ہی نہیں ہورہے ۔

ایک اورصارف کا کہنا تھا کہ ایم این اے ہوتے ہوئے فیصل واڈا کو سندھ سے سینیٹ کا الیکشن لڑوانے کا مطلب ہے کہ تحریک انصاف کو فیصل واڈا کیخلاف زیرسماعت کیس کے متوقع فیصلہ کااندازہ ہو گیا ہے۔ اس لئے اپنی ایک ATM کو بچانے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے

واضح رہے کہ تحریک انصاف کے لئے کراچی میں بڑا دھچکا سامنے آنیوالا ہے، وفاقی وزیر فیصل واوڈا آنیوالے دنوں میں نااہل ہو سکتے ہیں

چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں 5 رکنی بینچ نے الیکشن کمیشن میں وفاقی وزیر فیصل واوڈا کی نااہلی سے متعلق کیس کی سماعت کی جس میں الیکشن کمیشن نے فیصل واڈا کو اگلی سماعت پر ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا۔

فیصل واوڈا کے وکیل محمد بن محسن کمیشن کے سامنے پیش نہیں ہوئے جب کہ الیکشن کمیشن نے کیس کے بار بار التوا پر فیصل واوڈا پر50 ہزار روپے جرمانہ عائد کردیا۔الیکشن کمیشن نے فیصل واوڈا کے وکیل کی جانب سے التوا کی درخواست پر اظہار برہمی کیا اور ممبر الیکشن کمیشن الطاف ابراہیم نے کہا کہ کیس سماعت میں التوا مانگنے کا یہ کوئی طریقہ نہیں ، آپ نے التوا کی درخواست کےساتھ ثبوت نہیں لگایاکہ وکیل کہاں مصروف ہیں، لاہور عدالت کا کیس، الیکشن کمیشن کیس سے منسلک نہیں ہے۔

چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ فیصل واوڈا کیس پہلے ہی بہت بار التوا کا شکار ہے ، آج ان کے وکیل کو ہمارے سوالات کے جواب دینا تھے، پوچھا گیا تھا کہ فیصل واوڈا نے کاغذات نامزدگی میں دوہری شہریت کے خانے میں ناقابل اطلاق کیوں لکھا، فیصل واوڈا کے وکیل نے بیان دیا تھا کہ واوڈا کے پاس غیر ملکی شہریت تھی، ہم نے سوال کیا تھا کہ فیصل واوڈا نے دوہری شہریت کب چھوڑی ؟

چیف الیکشن کمشنر کا کہنا تھا کہ جوابدہ کی جانب سے بار بار تاخیر الیکشن کمیشن کو قابل قبول نہیں، فیصل واوڈا کے کیس میں مختصر مدت کے بعد دوبارہ سماعت کرتے ہیں، واوڈا کیس میں 50 ہزار اخراجات ادا کریں۔

الیکشن کمیشن نے آئندہ سماعت پر فیصل واوڈا کو ذاتی حیثیت میں پیش ہونےکا حکم دیتے سماعت 24 فروری تک ملتوی کردی۔

درخواست گزار کے وکیل نے کہا تھا کہ اگر فیصل واوڈا بڑا آدمی ہے اور اس سے سوالات نہیں پوچھے جاسکتے ہیں تو ، ریٹرننگ افسر سے یہ بتایا جائے کہ وہ دوہری شہریت رکھنے کے باوجود کاغذات نامزدگی کو کیوں قبول کرتے ہیں۔اس پر ، سی ای سی نے ریمارکس دیئے کہ کوئی بات نہیں کتنا بڑا شخص ہو ، اس کا الیکشن کمیشن پر کوئی اثر نہیں ہوگا ، الیکشن کمیشن میرٹ کو سامنے رکھتے ہوئے فیصلہ کرے گا ، کوئی بھی متاثر نہیں ہوگا۔

وکیل محمد بن محسن نے یہ بھی کہا کہ فیصل واوڈا کی دہری شہریت ہے اور اس پر کوئی تنازعہ نہیں ہے۔ چیف الیکشن کمشنر کا کہنا تھا کہ انہوں نے اعتراف کیا ہے کہ واوڈا کی دوہری شہریت ہے اور جب انہوں نے پوچھا کہ فیصل واوڈا نے اپنی دوہری شہریت ترک کردی ہے۔

فیصل واوڈا کی دوہری شہریت کے حوالہ سے نااہلی کیس اسلام آباد ہائیکورٹ میں بھی زیر سماعت ہے، دوہری شہریت ثابت ہونے پر فیصل واوڈا کو الیکشن کمیشن نااہل کر دے گا جس سے تحریک انصاف کو کراچی میں بڑا دھچکا پہنچے گا اور دوبارہ ضمنی الیکشن ہوں گے

آج کی الیکشن کمیشن میں سماعت سے یہ بات واضح ہو چکی ہے کہ فیصل واوڈا کی دوہری شہریت الیکشن کمشین میں ثابت ہو چکی ہے،چیف الیکشن کمشنر کے ریمارکس سے ثابت ہوتا ہے کہ آنے والے دنوں میں فیصلہ فیصل واوڈا کی نااہلی کی صورت میں ہی آئے گا کیونکہ ایسے کیسز میں پہلے نااہلی ہو چکی ہے

فیصل واوڈا جو بوٹ لے کر گئے وہ میرے بچوں کا ہے، خاتون کا سینیٹ میں دعویٰ

فیصل واوڈا کے خلاف ہارے ہوئے امیدوار کی جانب سے مقدمہ کی درخواست پر عدالت کا بڑا حکم

نااہلی کی درخواست پر فیصل واوڈا نے ایسا جواب جمع کروایا کہ درخواست دہندہ پریشان ہو گیا

وفاقی وزیر فیصل واوڈا کی نااہلی کے لیے دائر درخواست میں موقف اپنا گیا ہے کہ انہوں نے کاغذات نامزدگی میں جعلی حلف نامہ جمع کروایا۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ فیصل واوڈا کو جعلی حلف نامہ جمع کروانے پر نااہل کیا جائے کیونکہ ایم این اے صادق اور امین نہیں رہے۔ سپریم کورٹ دوہری شہریت رکھنے پر 2 سینٹرز کو نا اہل قراردے چکی ہے

فیصل واوڈا کی بیرون ملک جائیدادیں، ناقابل تردید ثبوت باغی ٹی وی نے حاصل کر لئے

درندہ صفت مجرمان کو پھانسی کی سزا دی جائے۔ دردانہ صدیقی

زیادتی کے مجرموں کو خصوصی عدالت کے ذریعے فی الفور سزا دی جائے،کل مسالک علماء بورڈ

آبروریزی کے بڑھتے واقعات کسی بڑی تباہی کی نشاندہی کر رہے ہیں، علامہ عبدالخالق اسدی

پنجاب پولیس کی اعلیٰ کارکردگی،موٹروے زیادتی کیس کے ملزم تیسرے روز بھی گرفتار نہ ہو سکے

موٹروے پر خاتون سے اجتماعی زیادتی، واحد عینی شاہد نے کیا منظر دیکھا؟ بتا دیا

قائمہ کمیٹی برائے مذہبی امور کا سی سی پی او لاہور کی برطرفی کا مطالبہ

سی سی پی او لاہور کو نشان عبرت بنایا جائے،اسکے ہوتے ہوئے عورت محفوظ نہیں رہ سکتی، مریم اورنگزیب

فیصل واوڈا نےعدالت کو مذاق بنایا ،عدالتی نظام پر ہنس رہا ہوگا،وکیل کے بیان پر عدالت نے کیا کہا؟

نااہلی سے بچنے کے لئے فیصل واوڈا نے عدالت میں کیا قدم اٹھا لیا

فیصل واوڈا نااہلی کیس، جلد سماعت کیلئے مقرر کرنے پر عدالت کا حکم آ گیا

فیصل واوڈا جواب نہیں دینا چاہتے تو بتا دیں، ہم فیصلہ کر دیتے ہیں، عدالت

فیصل واوڈاصادق وامین نہیں رہے،حقائق چھپائے:نااہل کیا جائے:مبشرلقمان نےاسپیکرقومی اسمبلی کودرخواست دےدی

فیصل واوڈا پر جرمانہ عائد،اگلی پیشی پر ذاتی حیثیت میں طلب

درخواست گزار نے کہا ہے کہ فیصل واوڈا نے امریکی شہریت ترک کرنے کی درخواست 22 جون کو جمع کرائی، فیصل واوڈا نے غیر قانونی طور پر پبلک آفس سنبھال رکھا ہے،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.