fbpx

تحریک لبیک کا دھرنا، کارکنان گرفتار،کیا خادم حسین رضوی کو گرفتار کر لیا گیا؟

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق تحریک لبیک کا اسلام آباد میں دھرنا دوسرے روز میں داخل ہو گیا ہے

تحریک لبیک کے ہزاروں شرکاء نے سخت موسم میں رات کھلے آسمان تلے گزاری،پولیس کی جانب سے آنسو گیس کے شیل فائر کئے گئے، مظاہرین کے خلاف رات کو کیا گیا آپریشن ناکام رہا،پولیس نے مظاہرین کو گرفتار بھی کیا

دوسری جانب تحریک لبیک کے سربراہ خادم رضوی کی گرفتاری کی خبریں چلنی شروع ہوئیں لیکن ان میں کوئی صداقت نہیں، خادم حسین رضوی کو گرفتار نہیں کیا گیا.

اسلام آباد سے سینئر صحافی مسعود چوھدری کا کہنا ہے کہ جب دھرنا پہنچ جاتا ہے تومزاکرات سے ہی اٹھتا ہے!طاقت کا استعمال بے وقوفی ہے !ابھی بھی وقت ہے

دوسری جانب انتظامیہ نے شرکا ء کا ہیلی کا پٹر سے جائرہ لیا، ہزاروں افراد فیض آباد میں موجود ہیں، اور فرانسیسی سفیر کو ملک بدر کرنے کا مطالبہ کر رہے ہیں

واضح رہے کہ فیض آبا دکے مقام پر تحریک لبیک کا دھرنا جاری ہے،دھرنے کے خلاف پولیس نے آپریشن کیا لیکن ناکامی ہوئی ،آئی جی اسلام آباد موقعہ پر موجود ھیں۔ حالات کشیدہ ہیں مظاھرین میں بھت زیادہ اشتعال پایا جاتا ھے،مظاھرین فیص آباد پل کے اوپر اور نیچے موجود ھیں ،ابھی تک آپریشن کامیاب نہ ھواھے۔

تحریک لبیک کا اسلام آباد میں مارچ ہو رہا ہے مارچ میں ہزاروں افراد شریک ہیں جو لیاقت باغ سے گزشتہ شب فیض آباد پہنچے ہیں ،پولیس نے شرکا کو روکنے کی کوشش کی لیکن کامیابی نہ ملی۔ پولیس کی جانب سے آنسو گیس کی شیلنگ کی گئی جبکہ متعدد مقامات پر رکاوٹیں تھیں جن کو عبور کر کے شرکاء فیض آباد پہنچ گئے

فرانس میں گستاخانہ خاکوں کی اشاعت پر فرانسیسی سفیر کی بے دخلی اور فرانسیسی مصنوعات کے بائیکاٹ کا مطالبہ لے کر تحریک لبیک کے سربراہ وفاقی دارالحکومت پہنچے ہیں ۔علامہ خادم رضوی مارچ کی قیادت کر رہے ہیں اور مارچ کے شرکاء کے ہمراہ مارچ میں ہی موجود ہیں

فیض آباد، تحریک لبیک کا احتجاج جاری، پولیس کا رات گئے آپریشن ناکام

‏ریلی کےشرکا اور پولیس اہلکار زخمی زخمی ہو گئے ,صحافیوں کوریلی شرکااور پولیس کی جانب سے کوریج سے روکنے کی کوشش کی جا رہی ہے ,صحافیوں کی پولیس اہلکاروں اور ریلی کے شرکا سے جھڑپیں جاری ہیں

تحریک لبیک احتجاج، اسلام آباد میں کون کونسے راستے بند ہیں؟ ڈی سی نے بتا دیا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.