بنگلہ دیشی رکن اسمبلی کا بھارت میں قتل،لاش کی کھال اتار کر گوشت کے کئے گئے ٹکڑے

لاش کے ٹکڑے کر کے شاپر میں ڈال کر مختلف مقامات پر پھینک دیئے
0
209
anwar bangla

بنگلہ دیش کے رکن اسمبلی کو بھارت میں قتل کر کے لاش کے ٹکڑے کر دیئے گئے، پولیس نے کاروائی کرتے ہوئے ایک ملزم کو گرفتار کر لیا ہے

بنگلہ دیشن کے رکن پارلیمنٹ انوارالعظیم انار کو بھارت میں قتل کیا گیا ہے،پولیس نے کاروائی کرتے ہوئے ایک ملزم کو حراست میں لیا ہے، دوران تحقیقات ملزم نے دل دہلا دینے والے انکشافات کئے ہیں،پولیس حکام کے مطابق ملزم کا تعلق بھی بنگلہ دیش سے ہے اور وہ دو ماہ قبل بھارت آیا تھا ملزم کی شناخت 24 سالہ جہاد حوالدار کے طور پر ہوئی،پولیس کے مطابق بنگلہ دیشی رکن پارلیمنٹ کے قتل کا ماسٹر مائنڈ اخترالزمان ہے وہ بھی بنگلہ دیشی شہری ہے، اختر الزمان نے گرفتار ملزم کو بلایا تھا، اور رکن پارلیمنٹ کے قتل کے بعد لاش کے ٹکڑے کر کے شاپر میں ڈال کر مختلف مقامات پر پھینک دیئے تھے

دوران تحقیقات ملزم نے بتایا کہ اس کے ساتھ چار دیگر ملزمان بھی تھے وہ بھی بنگلہ دیشی تھے، انہوں نے اختر الزمان کی ہدایات پر انوارالعظیم کو گلا دبا کر قتل کیا، کلکتہ کے ایک فلیٹ میں انوارالعظیم کو بلاکر اسکی جانب لی گئی، پھر لاش سے کھال اتاری گئی، گوشت کے ٹکڑے کئے گئے اور پھر رکن اسمبلی کی شناخت ختم کرنے کے لئے لاش کے ٹکڑے کر کے مختلف مقامات پر پھینکے گئے

بنگلہ یشی رکن اسمبلی کو آخری مرتبہ نیو ٹاؤن کے فلیٹ میں داخل ہوتے دیکھا گیا تھا، یہ فلیٹ مقتول کے دوست کی ملکیت تھا جسے اس نے کرائے پر دے رکھا تھا،بنگلہ دیش کے وزیر داخلہ اسد الزمان خان کا کہنا ہےکہ رکن اسمبلی 13 مئی کو لاپتا ہوئے تھے، ان کے قتل کے سلسلے میں تین ملزمان کو گرفتار کیا ہے تاہم ابھی لاش برآمد کرنا باقی ہے،

بحریہ ٹاؤن کے ہسپتال میں شہریوں کو اغوا کر کے گردے نکالے جانے لگے

سماعت سے محروم بچوں کے لئے بڑی خوشخبری

سماعت سے محروم بچوں کے والدین گھبرائیں مت،آپ کا بچہ یقینا سنے گا

چلڈرن ہسپتال کا کوکلیئر امپلانٹ کے تمام اخراجات برداشت کرنے کافیصلہ،ڈاکٹر جاوید اکرم

سوتیلے باپ نے لڑکی کے ساتھ کی زیادتی، ماں‌نے جرم چھپانے کیلیے کیا تشدد

کم عمر لڑکیوں کے ساتھ زیادتی کے شوقین جعلی عامل کو عدالت نے سنائی سزا

کاروبار کے لئے پیسے نہ لانے پر بہو کو کیا گیا قتل

16 خواتین کو نازیبا و فحش ویڈیو ،تصاویر بھیج کر بلیک میل کرنے والا گرفتار

Leave a reply