fbpx

پاکستان کے وہ اضلاع جہاں رواں برس ڈینگی کا کوئی مریض نہیں

پاکستان کے وہ اضلاع جہاں رواں برس ڈینگی کا کوئی مریض نہیں

محکمہ صحت خیبر پختونخوا نے ڈینگی سالانہ رپورٹ جاری کردی ہے

رپورٹ کے مطابق 2021 میں دس ہزار سے زائد افراد ڈینگی کا شکار ہوئے،2021میں دس افراد ڈینگی سے جان بحق ہوئے ہیں ،ڈینگی کے دوران پشاور، نوشہرہ، ہری پور، صوابی ہائی رسک اضلاع رہے ضلع پشاور میں ڈینگی کے سب سے زیادہ 5700 کیسز رپورٹ ہوئے ،اپر چترال ، اپر کوہستان اور شمالی وزیرستان سے ڈینگی کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا ،98فیصد ڈینگی کے مریض سرکاری اسپتالوں میں زیر علاج اور صحت یاب ہوئے بروقت اقدامات اور عملے کی بھرپور کوششوں سے پچھلے سال کی نسبت امسال ڈینگی سے کم لوگ متاثر ہوئے ،صوبے میں ڈینگی کا ابھی کوئی ایکٹیو کیس موجود نہیں ،ڈینگی کے دوران کے ٹی ایچ میں 3328اور ایچ ایم سی 1206 مریضوں کا علاج ہوا

ٹرمپ میرے خواب میں آئے ،بھارتی شہری نے ٹرمپ کے دورہ بھارت سے قبل ایسا کام کیا کہ سب حیران

متنازعہ شہریت بل پر امریکا میدان میں آ گیا،ٹرمپ کریں گے مودی سے کشمیر، شہریت بل پر بات

ٹرمپ کا کریں گے بھارتی فنکار استقبال،28 سٹیج تیار، طلبا کیا کریں گے؟ ڈیوٹی لگا دی گئی

بھارت میں کھڑے ہوکر ٹرمپ نے پاکستان بارے ایسا کیا کہہ دیا کہ مودی کو پسینے چھوٹ گئے

ٹرمپ کو ویلکم کرتے وقت مودی نے ایسے نام سے پکارا کہ ٹرمپ منہ دیکھتے رہ گئے، دیا کھرا جواب

انیل مسرت منموہن سنگھ کے ہمراہ سیلفی بنانے لگے تو کیا ہوا؟

سابق بھارتی وزیراعظم منموہن سنگھ کا کرونا ٹیسٹ، کیا آئی رپورٹ؟

ڈینگی کا ڈنگ تیز، ہسپتال بھر گئے

لاہور میں ڈینگی کیسز کی شرح میں کمی

دوسری جانب ڈینگی مچھر سے 5 پولیس اہلکاروں کی ہلاکت کے خلاف تحریک التواء پنجاب اسمبلی میں جمع کروا دی گئی تحریک التواء مسلم لیگ ن کی رکن پنجاب اسمبلی ربعیہ نصرت کی جانب سے جمع کرائی گئی۔ جس کے متن میں کہا گیا کہ ناقص سپرے ،گندے واش روم تھانوں میں ڈینگی وائرس سے پولیس اہلکاروں کی زندگیاں غیر محفوظ ہوگئیں ،افسران کی بجائے پولیس اہلکار سب سے زیادہ ڈینگی مچھر سے متاثر ہو رہے ہیں ڈینگی کے باعث لاہور پولیس کے 5 اہلکار زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔ تھانوں میں صفائی کے ناقغ انتظامات کے باعث ڈینگی کی افزائش ہورہی ہے۔ ڈینگی سے مرنے والوں میں لایور پولیس کے 4 کانسٹیبل اور ایک ہیڈ کانسٹیبل محمد ارشد شامل ہیں۔ پولیس کے اعدادوشمار کے مطابق ڈینگی سے متاثر ہونے والے اہلکاروں کی مجموعی تعداد 225 ہے۔ ان میں 130 ٹریفک وارڈن بھی شامل ہیں۔ تھانوں کے واش روم میں صفائی کے نامناسب انتظامات کے باعث پولیس اہلکاروں میں سخت تشویش پائی جاتی ہے