گزشتہ برس کتنے مقدمات نمٹائے؟ چیف جسٹس نے بتا دیا

0
59
گزشتہ-برس-کتنے-مقدمات-نمٹائے؟-چیف-جسٹس-نے-بتا-دیا #Baaghi

کورونا کے باوجود عدالتوں کا دروازہ کھلا رکھا،گزشتہ برس کتنے مقدمات نمٹائے؟ چیف جسٹس

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق چیف جسٹس گلزار احمد نے نئے عدالتی سال پرفل کورٹ ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ سال میں 20910 نئے مقدمات درج ہوئے ،گزشتہ سال 12 ہزار968 مقدمات نمٹائے گئے

چیف جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ گزشتہ عدالتی سال ہر لحاظ سے پاکستان سمیت دنیابھرکیلئے مشکل سال تھا کورونا کے باعث مقدمات کو نمٹانے کی راہ میں مشکلات کا سامنا رہا،کورونا کے باوجود ہم نے عدالتوں کا دروازہ عوام کیلئے کھلا رکھا،کورونا کے باعث عدالتوں میں زیر التوا مقدمات میں اضافہ ہوا،گزشتہ عدالتی سال میں زیر التوا مقدمات میں اضافہ وکلا کا پیش نہ ہونا بھی ہے،گزشتہ عدالتی سال کے آغاز پر45 ہزار644 زیر التوا مقدمات تھے، گزشتہ سال میں 20910 نئے مقدمات درج ہوئے ،گزشتہ سال 12 ہزار968 مقدمات نمٹائے گئے،سپریم کورٹ میں ویڈیو لنک سے بھی مقدمات کی سماعت کی جاتی ہے،23دسمبر کو نیشنل جوڈیشل کمیٹی نے ڈسٹرکٹ جوڈیشری کی 10 سالہ کارکردگی کا جائزہ لیا،پشاور ہائی کورٹ کو تجویز دی کہ ضم قبائلی اضلاع کے ججز کی تعداد میں اضافہ کرے،ہائیکورٹس کو عدالتوں کی تزئین و آرائش کیلئے فنڈز فراہم کر دئے گئے،

سپریم کورٹ میں نئے عدالتی سال پرفل کورٹ ریفرنس سے اٹارنی جنرل خالد جاوید نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ کے نئے سال کے آغازپرججزکی تعداد مکمل نہیں،اعلیٰ عدلیہ میں خاتون جج کی کمی آدھی آبادی کونمائندگی سے محروم رکھے گی،سپریم کورٹ نے گزشتہ عدالتی سال میں متعدد اہم فیصلے کیے، گزشتہ عدالتی سال کے 2 فیصلے اہم رہے،ایک فیصلے کی وجہ سے بہت سے لوگ بے روزگارہوئے،دوسرے فیصلے نے ظاہرکیا خواتین ہراسگی سے متعلق اعلیٰ عدلیہ کتنی بے بس تھی،آج سے پہلے بنچ اوربارکے درمیان اتنی دوریاں کھبی نہیں تھیں، وکیل ہڑتال کرتے ہیں اورعدالتوں کے دروازے بندکردیئے جاتے ہیں، ہڑتال مزدوروں کا ہتھیارتھا جونا انصافیوں کیخلاف استعمال ہوتا تھا، اب ہڑتال کوذاتی مقاصد کیلئے استعمال کیا جا رہا ہے،

باقی یہ رہ گیا تھا کہ وکلا آئیں اور مجھے قتل کر دیں میں اسکے لیے تیار تھا،چیف جسٹس اطہر من اللہ

بے لگام وکلا نے مجھے زبردستی "کہاں” لے جانے کی کوشش کی، چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ

اسلام آباد ہائیکورٹ حملہ کیس، وکلاء مشکل میں پھنس گئے

ہم سب ٹرائل پرہیں، اللہ بھی ہمیں دیکھ رہا ہوں،چیف جسٹس اطہرمن اللہ

ستر سال سے کچھ نہیں ہوا،موجودہ حکومت نے بہت کچھ کیا،چیف جسٹس اطہرمن اللہ

پی ٹی وی میں اچھے لوگوں کو پیچھے اور کچرے کو آگے کر دیا جاتا ہے، ایسا کیوں؟ قائمہ کمیٹی

بسکٹ آسانی سے ہضم ہو جاتا ہے اس کے اشتہار میں ڈانس کیوں؟ اراکین پارلیمنٹ نے کیا سوال

میرے پاس کوئی اختیار نہیں، قائمہ کمیٹی اجلاس میں چیئرمین پیمرا نے کیا بے بسی کا اظہار

میڈیا کو حکومت نے اشتہارات کی کتنی ادائیگیاں کر دیں اور بقایا جات کتنے ہیں؟ قائمہ کمیٹی میں رپورٹ پیش

نعیم بخاری و دیگر ڈائریکٹرز کی تعیناتی کے خلاف درخواست،وفاقی حکومت نے مہلت مانگ لی

اسلام آباد ہائیکورٹ میں سیکورٹی سخت،رینجرزتعینات،حملہ وکلاء کو عدالت نے کہاں بھجوا دیا؟

مشرف کا سب سے بڑا جرم کونسا؟ وزیراعظم عمران خان بھی بول پڑے

وزیراعظم صاحب جو کام گذشتہ چھ دہائیوں سے نہ ہوسکا آج وہ آپ نے کر دیا،چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ

Leave a reply