تحریک انصاف کا کوئی بھی قدم پاکستان کے خلاف نہیں ہو گا،بیرسٹر گوہر

0
100
gohar

تحریک انصاف کے رہنما بیرسٹر گوہر علی خان نے اڈیالہ جیل کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ آج بانی پی ٹی آئی سے جیل میں ملاقات ہوئی

بیرسٹر گوہر کا کہنا تھا کہ ہم نے اوپن ٹرائل کی حقیقت کا بتا دیا ہے،پی ٹی آئی کوئی ایسا کام نہیں کرے گی جس سے ملک کی معیشت کو نقصان ہو، پی ٹی آئی ہر وہ کام کرئے گی جو ملکی معیشت کو آگے لے کر جائے ،آج عدالت کے سامنے اس بات کا بھی بتایا گیا کہ میڈیا کو بھی آنے نہیں دیا گیا، نگران حکومت صاف شفاف انتخابات کروانے میں ناکام رہی،الیکشن کمیشن فارم 47 کے تحت نتائج جاری کرنے میں ناکام رہا، ہم نے مطالبہ کیا تھا کہ سابق کمشنر راولپنڈی لیاقت علی چھٹہ اور ان کی فیملی کو تحفظ فراہم کیا جائے،کل سابق کمشنر کا جو بیان جاری ہوا اب حقیقت عوام جان چکی ہے، جو فارم 47 جاری ہوئے وہ جعلی ہے، ہم پارلیمان کا حصہ بنیں گے، ہم میدان چھوڑ کر نہیں جائیں گے، ہم آج آئی ایم ایف کو خط لکھیں گے،ہم ہر حال میں پاکستان میں قانون کی بالادستی اور رول آف لاء چاہتے ہیں، جو خط ہم آئی ایم ایف کو لکھیں گے وہ ملکی مفاد میں ہو گا ،ملک کے خلاف ہم کچھ بھی نہیں کرے گے، ریاست، جمہوریت اور قانون کو کوئی نقصان نہیں پہنچے گا،

بیرسٹر گوہر کا مزید کہنا تھا کہ پی ٹی آئی نے ہی پناہ گاہیں بنائی، صحت کارڈ بنائے اور انوسٹمنٹ لے کر آئی، تحریک انصاف کا کوئی بھی قدم نہ پاکستان کے خلاف اور نہ عوام کے خلاف ہو گا،ہم جمہوریت کی جنگ لڑ رہے ہیں، اسی آزادی کے لیے بانی پی ٹی آئی جیل میں ہیں،

واضح رہے کہ عمران خان نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف کو خط لکھ دیا ہے، آج خط چلا گیا ہو گا،راولپنڈی اڈیالہ جیل میں کمرۂ عدالت میں صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ اگر ایسے حالات میں ملک کو قرضہ ملا تو قرضے کو واپس کون کرے گا، اس قرض سے غربت بڑھے گی،جب تک سرمایہ کاری نہ ہو قرض بڑھتا جائے گا، سب سے پہلے ملک میں سیاسی استحکام لایا جائے،

اڈیالہ جیل،عمران ،بشریٰ ملاقات،190 ملین پاؤنڈ اسکینڈل ریفرنس کیس،فردجرم کاروائی مؤخر

دوران عدت نکاح کیس، سزا کیخلاف عمران ،بشریٰ بی بی کی اپیل دائر

عمران ،بشریٰ بی بی غیر شرعی نکاح کیس ، عدالتی فیصلہ درست ہے، مفتی قوی

سائفر کی ماسٹر کاپی وزارت خارجہ کے پاس موجود ہے،اعظم خان کا بیان

عمران خان اور جیل سپرنٹنڈنٹ کے درمیان تلخ جملوں کا تبادلہ

نومنتخب حکومت کے ساتھ کام کرنے کے منتظر ہیں،آئی ایم ایف

Leave a reply