بیٹوں کے تشدد کا شکار باپ کو عدالت سے بھی تحفظ نہ مل سکا

0
133
sindh highcourt01

سندھ ہائیکورٹ نے باپ کی بیٹوں سے تحفظ کی درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر مسترد کردی ہے

دوران سماعت چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ عقیل احمد عباسی نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ” کون بدبخت اپنے والدین پر تشدد کرتا ہے جو ماں باپ پر ظلم کرتا ہے وہ اللہ کے عذاب سے نہیں بچ سکتا” .دوران سماعت سرکاری وکیل نے عدالت میں کہا کہ سابق صدر پاکستان نے2021 میں پیرنٹ پروٹیکشن ایکٹ جاری کیا تھا، اسمبلی کی عدم دلچسپی کے باعث ایکٹ کو منظور نہیں کیا گیا، ایکٹ کی مدت ختم ہوچکی، اس لیے درخواست پر کوئی فیصلہ جاری نہیں کیا جاسکتا

سندھ ہائیکورٹ کے چیف جسٹس عقیل احمد عباسی نے درخواست کو ناقابل سماعت قرار دے کر مسترد کردیا اور ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ بدقسمتی سے اس درخواست پر فیصلہ نہیں کرسکتے، درخواست میں جس ایکٹ کا حوالہ دیا گیا ہے وہ ختم ہوچکاہے۔

درخواست گزار محمد عابد حسین نے اپنے بیٹوں سے تحفظ کے لیے عدالت سے رجوع کرکے درخواست جمع کروائی اور جلد فیصلے کا مطالبہ کیا تھا،درخواست گزار محمد عابد حسین نے سندھ ہائیکورٹ میں دائر اپنی درخواست میں موقف اختیار کیا تھا کہ میں گلشن اقبال بلاک 13 ڈی کا رہائشی ہوں، گراؤنڈ فلور پر اپنے 2 بچوں اور اہلیہ کے ساتھ رہائش پذیر ہوں،پہلی منزل پر میرے 3 بیٹے رہتے ہیں جو اپنا الگ الگ کاروبار کرتے ہیں، ستمبر 2023 کو میرے بیٹوں نے مجھے اور اہلیہ کو تشدد کا نشانہ بنایا اور گالیاں دیں، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ایسٹ کو تحفظ سے متعلق درخواست دی تھی لیکن بات نہیں سنی گئی، میری شکایت پر جلد کارروائی مکمل کرنے کا حکم دیا جائے۔

پی آئی اے کی نجکاری سب سے پہلے ہو گی،وفاقی وزیر خزانہ

پی آئی اے نے پچھلے پانچ سالوں میں پانچ سو ارب کا نقصان کیا، علیم خان

عمان میں ہنگامی لینڈنگ کرنیوالے پی آئی اے طیارے کی فنی خرابی دور نہ ہوسکی،مسافر منتظر

وزیراعظم نے پی آئی اے کی نجکاری پر عمل درآمد کیلئے حتمی شیڈول طلب کر لیا

کراچی میں پی آئی اے طیارے کا حادثہ یا دہشت گردی؟ اہم انکشافات

طیارے کا کپتان جہاز اڑانے کے قابل نہیں تھا،مبشر لقمان کھرا سچ سامنے لے آئے

پی آئی اے کی نجکاری،وزیرہوابازی و نجکاری کی زیر صدارت مشاورتی اجلاس

Leave a reply