جنسی زیادتی کے 14 جھوٹے مقدمے درج کروانیوالی” حسینہ” گرفتار

وکیل کے خلاف بھی جھوٹا مقدمہ درج کروایا جو اسے مہنگا پڑا
0
250
A SERIAL FALSE RAPE CASE FILER WHO HAS FILED 10 FALSE RAPE, GANGRAPE CASES

ایک دو نہیں بلکہ جنسی زیادتی کے 14 جھوٹے مقدمے درج کروانیوالی حسینہ بالآخر قانون کے شکنجے میں آ گئی

واقعہ بھارت کا ہے. جے پور پولیس نے شہریوں پر جنسی زیادتی کے جھوٹے مقدمے درج کروانے والی خاتون کو گرفتار کیا ہے، خاتون نے 2016 سے اب تک 14 جنسی زیادتی کے جھوٹے مقدمے درج کروائے. خاتون نے ایک وکیل کے خلاف بھی جھوٹا مقدمہ درج کروایا جو اسے مہنگا پڑا اور وکیل نے خاتون کو گرفتار کر لیا. راجھستان پولیس نے اس ضمن میں کاروائی کی ہے اور خاتون کو تحویل میں لیا ہے ،تحقیقات جاری ہیں

بھاؤنا شرما نامی خاتون نے جنسی زیادتی کے جھوٹے مقدمے درج کروانے کا بھارت میں ریکارڈ قائم کیا ہے. خاتون مردوں سے دوستی کرتی.پھر انکو بلیک میل کر کے لوٹتی.خاتون نے کئی شہروں میں جعلی مقدمے درج کروائے ہیں.خاتون کو اس وقت گرفتار کیا گیا جب ایک وکیل نے خاتون کے خلاف درخواست دی کہ بھاؤنا شرما نے اسے بلیک میل کرنے کے لئے جھوٹا جنسی زیادتی کا مقدمہ درج کروایا ہے.عدالت نے تحقیقات کا حکم دیاتو وکیل کے خلاف بھاؤںا شرما کا مقدمہ جھوٹا ثابت ہوا . جس کے بعد پولیس نے خاتون کو گرفتار کر لیا.

بھاونا شرما کے خلاف 8 مئی کو صدر پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کی گئی تھی۔ اطلاعات کے مطابق، بھاونا شرما نے 2016 سے 2024 کے درمیان گزشتہ آٹھ سالوں میں مختلف تھانوں میں مبینہ طور پر عصمت دری اور بلیک میلنگ کے 14 جھوٹے مقدمات درج کرائے ہیں۔خاتون کے خلاف درج مقدمے کے مطابق ، بھاونا شرما نے نتن مینا سے دوستی کی اور ان پر شادی کے لیے دباؤ ڈالا۔ جب اس نے انکار کیا تو اس نے مبینہ طور پر ریپ کا جھوٹا الزام لگانے کی دھمکی دی اور رقم کا مطالبہ کیا۔ نتن مینا نے کہا کہ بھاونا نے پہلے ہی کئی افراد کے خلاف اسی طرح کے مقدمات درج کرائے ہیں۔ بھاونا نے جیوتی نگر پولیس اسٹیشن میں مینا کے خلاف عصمت دری کا مقدمہ درج کرایا۔شکایت ملنے کے بعد پولیس نے فوری کارروائی کی اور بھاونا شرما کو گرفتار کر لیا۔ اسے عدالت میں پیش کیا گیا عدالت نے بھاؤنا شرما کو تحقیقات کے لئے جسمانی ریمانڈ پر بھج دیا ہے. تحقیقات سے معلوم ہوا کہ اس نے گزشتہ برسوں میں 14 مقدمات درج کروائے ہیں اور ان میں سے کئی جھوٹے پائے گئے تھے۔ کچھ کیسز میں حتمی رپورٹ یا ایف آر پہلے ہی پیش کی جا چکی ہے اور انہیں بے بنیاد قرار دے کر مسترد کر دیا گیا ہے۔ دیگر کیسز میں تفتیش جاری ہے۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے خواتین کے خلاف جرائم کے لیے خصوصی تفتیشی یونٹ کے ایڈیشنل ڈی سی پی گرو شرم راؤ نے تصدیق کی کہ بھاونا شرما کو تفتیش کے دوران انکشاف سامنے آیا کہ خاتون کی جانب سے درج کروائے گئے مقدمات جھوٹے تھے۔ پولیس نے آن لائن لین دین کے ریکارڈ سمیت ٹھوس شواہد حاصل کیے جو اس کے خلاف الزامات کی تائید کرتے ہیں

بھاونا شرما کی طرف سے 2016 سے درج مقدمات
ستمبر 2016 میں، بھاونا شرما نے آئی پی سی کی دفعہ 323 اور 341 کے تحت شیام نگر پولیس اسٹیشن میں اپنا پہلا مقدمہ درج کرایا۔ اسی مہینے میں، اس نے اسی شخص کے خلاف آئی پی سی کی دفعہ 376 اور 354 کے تحت ایک اور مقدمہ درج کرایا۔ اس معاملے میں جہاں پہلے کیس میں چارج شیٹ داخل کی گئی تھی، وہیں دوسرے معاملے میں ملزم کو بری کر دیا گیا تھا۔بھاونا شرما کا تیسرا مقدمہ اکتوبر 2018 میں جیوتی نگر پولیس اسٹیشن میں آئی پی سی کی دفعہ 376، 307، 354 اور 500 کے تحت درج کیا گیا تھا۔ کیس میں چارج شیٹ داخل کی گئی ہے۔چوتھا کیس مئی 2019 میں کنوٹہ پولیس اسٹیشن میں چار پانچ مردوں کے خلاف آئی پی سی کی دفعہ 376D، 377، 354، 307، 342 اور 323 کے تحت درج کیا گیا تھا۔ اس معاملے میں ایف آر درج کی گئی ہے۔پانچواں کیس مئی 2020 میں گروگرام کے ڈی ایل ایف پی ایچ 3 پولیس اسٹیشن میں آئی پی سی کی دفعہ 376 (2) این اور 420 کے تحت درج کیا گیا تھا۔ جبکہ ملزمہ کو اس کیس میں بری کر دیا گیا تھا، اسے مارچ 2022 میں 344 CrPC کا مجرم قرار دیا گیا تھا۔بھاونا شرما نے جنوری 2021 میں شپرا پاتھ پولیس اسٹیشن میں دفعہ 376(2)N اور 420 IPC کے تحت چھٹا مقدمہ درج کیا تھا۔ اس معاملے میں ایف آر جمع کرائی گئی ہے ،شرما ک نےساتواں مقدمہ فروری 2021 میں آئی پی سی کی دفعہ 376، 376(2)N، 342 اور 506 کے تحت پچور راجگھر پولیس اسٹیشن میں درج کروایا۔ کیس کی تفتیش جاری ہے۔آٹھواں مقدمہ اس نے جون 2022 میں چترکوٹ پولیس اسٹیشن میں آئی پی سی کی دفعہ 323، 341، 354، اور 506 اور آئی ٹی ایکٹ کی دفعہ 66 کے تحت درج کیا تھا۔ نواں مقدمہ اس نے جون 2022 میں نگر پولیس اسٹیشن میں آئی پی سی کی دفعہ 376(2)N، 354D اور 506 کے تحت درج کیا تھا۔ دسواں مقدمہ اس نے جون 2022 میں کوٹا کے سوکیت پولیس اسٹیشن میں آئی پی سی کی دفعہ 376، 354، 354D، 342، 323، 313، 450 اور 120B کے تحت درج کیا تھا۔ معاملہ زیر تفتیش ہے۔گیارہواں مقدمہ اس نے جون 2023 میں آئی پی سی کی دفعہ 228 اے، 500، 501، 506، 509، 120 بی اور آئی ٹی ایکٹ کی دفعہ 72 میں درج کیا تھا۔بارہواں مقدمہ اس نے جون 2023 میں شیام نگر پولیس اسٹیشن میں تعزیرات ہند کی دفعہ 376، 354، 420، 341، 323 اور 120B کے تحت درج کیا تھا۔ معاملہ زیر تفتیش ہے۔تیرھواں مقدمہ اس نے دسمبر 2023 میں مہیش نگر پولیس اسٹیشن میں آئی پی سی کی دفعہ 376، 377، 354، 323، 506 اور 190 کے تحت درج کیا تھا اور معاملہ زیر التوا ہے۔سب سے حالیہ کیس اپریل 2024 میں جیوتی نگر پولیس اسٹیشن میں آئی پی سی کی دفعہ 376، 384، 195A اور 120B کے تحت درج کیا گیا تھا۔ معاملہ زیر التوا ہے۔حالیہ کیس کے علاوہ، اس کے خلاف دو ایف آئی آر درج کی گئی ہیں

بھاونا شرما اور گرفتاری کا پس منظر
اطلاعات کے مطابق بھاونا شرما نے قانونی مدد کی ضرورت کے بہانے ایک وکیل سے رابطہ کیا۔ ابتدائی طور پر، اس نے متاثرہ سے 7,000 روپے ادھار لیے کہ کچھ فوری ضرورت ہے۔ آہستہ آہستہ بھاونا شرما نے مزید رقم کا مطالبہ کرنا شروع کر دیا اور پیسے دینے سے انکار کرنے پر متاثرہ کے خلاف جھوٹا مقدمہ درج کرنے کی دھمکی دی۔ جب متاثرہ نے جان چھڑائی تو شرما نے جیوتی نگر پولیس اسٹیشن میں اس کے خلاف عصمت دری کی شکایت درج کرائی۔19 مئی کو صدر پولیس نے متاثرہ کی شکایت کی بنیاد پر اسے گرفتار کیا۔ ڈی سی پی امیت کمار نے تصدیق کی کہ اسے گرفتار کر کے پولیس کی تحویل میں بھیج دیا گیا ہے۔

بھاونا شرما کے خلاف پچھلے مقدمات اور قانونی کارروائی
بھاونا شرما کی عصمت دری، چھیڑ چھاڑ اور حملہ کے متعدد جھوٹے مقدمات درج کرنے کی تاریخ ہے۔ ان میں سے پولیس پہلے ہی عصمت دری کے تین اور حملہ کے ایک معاملے میں چارج شیٹ داخل کر چکی ہے۔ نو دیگر مقدمات میں ایف آرز جمع کرائی گئی ہیں۔ ایک کیس میں ابھی تک تفتیش جاری ہے۔قابل ذکر بات یہ ہے کہ اس نے گروگرام کی عدالت میں ایک کیس میں اپنا بیان بدل دیا جس کی وجہ سے عدالت نے اس کے خلاف جھوٹا مقدمہ درج کرنے پر جرمانہ عائد کیا تھا۔ بار ایسوسی ایشن نے بھی ان کے خلاف مکمل تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔پولیس بھاونا شرما کے پس منظر کی چھان بین کر رہی ہے تاکہ اس کی بھتہ خوری کی اسکیموں کے بارے میں مزید تفصیلات سامنے آئیں۔

بحریہ ٹاؤن کے ہسپتال میں شہریوں کو اغوا کر کے گردے نکالے جانے لگے

سماعت سے محروم بچوں کے لئے بڑی خوشخبری

سماعت سے محروم بچوں کے والدین گھبرائیں مت،آپ کا بچہ یقینا سنے گا

چلڈرن ہسپتال کا کوکلیئر امپلانٹ کے تمام اخراجات برداشت کرنے کافیصلہ،ڈاکٹر جاوید اکرم

سوتیلے باپ نے لڑکی کے ساتھ کی زیادتی، ماں‌نے جرم چھپانے کیلیے کیا تشدد

کم عمر لڑکیوں کے ساتھ زیادتی کے شوقین جعلی عامل کو عدالت نے سنائی سزا

کاروبار کے لئے پیسے نہ لانے پر بہو کو کیا گیا قتل

16 خواتین کو نازیبا و فحش ویڈیو ،تصاویر بھیج کر بلیک میل کرنے والا گرفتار

دوران پرواز 16 سالہ لڑکی کو ہراساں کرنیوالے کو ملی سزا

کپڑے اتارو،مجھے…دکھاؤ، اجتماعی زیادتی کا شکار لڑکی کو مرد مجسٹریٹ کا حکم

زبردستی دوستی کرنے والے ملزم کو خاتون نے شوہر کی مدد سے پکڑوا دیا

دوران دوستی باہمی رضامندی سے جنسی عمل کو شادی کے بعد "زیادتی” قرار دے کر مقدمہ درج

خاتون کو برہنہ کر کے تشدد ،بنائی گئی ویڈیو،آٹھ ملزمان گرفتار

شادی کی ضد مہنگی پڑ گئی،ملزم نے خاتون کو پارک میں زندہ جلا دیا

خبردار، حق خطیب سے بڑا فنکار آ گیا، سائنس ہار گئی،ہاتھ سے موبائل کی بیٹری چارج

بلیک میلنگ کی ملکہ حریم شاہ کا لندن میں نیا”دھندہ”فحاشی کا اڈہ،نازیبا ویڈیو

Leave a reply