fbpx

عدلیہ اورججز پرانگلیاں اٹھانا، ججز پر الزامات لگانا بند کریں،جس پراعتراض ہے اس کا نام لیں،چیف جسٹس

عدلیہ اورججز پرانگلیاں اٹھانا، ججز پر الزامات لگانا بند کریں،جس پراعتراض ہے اس کا نام لیں،چیف جسٹس

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق چیف جسٹس عمر عطا بندیال نے کہا ہے کہ وائس چیئرمین پاکستان بار کونسل کا ججز کو تنخواہ دار ملازم کہنا انتہائی نامناسب ہے،

چیف جسٹس عمر عطا بندیال کا فل بینچ سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ جس کو کوئی مسئلہ ہے میرے پاس آئے میرے دروازے سب کیلئے کھلے ہیں،بینچ تشکیل دینا اور کیس لگانا یہ چیف جسٹس کا اختیار ہے،عدلیہ اور ججز پر انگلیاں اٹھانا بند کریں، ججز پر الزامات لگانا بند کر دیں،جس بندے پر اعتراض ہے اس کا نام لیں بینچ تشکیل دینا اور کیس لگانا چیف جسٹس کا اختیار ہے،عام طور پر سخت الفاظ استعمال نہیں کرتا،ججز رولز کمیٹی میں میرے برابر جج نے طریقہ کار پر اتفاق رائے کیا،

چیف جسٹس عمر عطا بندیال کا کہنا تھا کہ رجسٹرار کی تعیناتی بہترین افسران میں سے کی گئی ہے رجسٹرار کو قانون کا بھی علم ہے اور وہ انتظامی کام بھی کرنا جانتے ہیں کیا آپ چاہتے ہیں انتظامی کام بھی میں کروں؟ کونسا مقدمہ مقرر ہونا ہے اور جس بنچ میں مقرر کرنا ہے یہ فیصلہ میں کرتا ہوں کسی جج کو بغیر ثبوت کے نشانہ نہیں بنایا جا سکتا بنچ تشکیل دینے کا اختیار ہمیشہ سے چیف جسٹس کا رہا ہے احسن بھون کس روایت کی بات کر رہے ہیں؟ بیس سال سے بینچز چیف جسٹس ہی بناتے ہیں بلاوجہ اعتراضات کیوں کیے جاتے ہیں ؟ رجسٹرار کی تعیناتی چیف جسٹس کرتے ہیں ججز تقرری کیلئے سب سے اہم ان کی دیانتداری، اہلیت، اور قابلیت ہے،جج کا تحمل اور اس کی ہر قسم کے اندرونی یا بیرونی دباو سے آزادی اہم ہے، اگر آکر مجھ سے بات نہیں کر سکتے تو آپ محض اخباروں کی زینت بننا چاہتے ہیں،احسن بھون کو کون سی عدالتی پریکٹس پر اعتراض ہے؟میرے دروازے احسن بھون کےلیے رات 9 بجے بھی کھلے ہیں ہماری تقرری غیرجانبدار ہوتی ہے،ہم بنا کسی دباؤ کام کرنے والے لوگ ہیں،میرے رجسٹرار کو گالیاں دینا بند کریں،میرے رجسٹرار کا 20 سالہ تعلیمی تجربہ ہے اپنے ضمیر کے مطابق فیصلہ کرتے ہیں ہم سب اللہ کو جواب دہ ہیں فیصلوں پر تنقید کریں ججز کی ذات پر نہیں

چیف جسٹس عمر عطا بندیال کا مزید کہنا تھا کہ ہم لوگ تو برادری کی بات باہر نہیں کرتے گھر کی بات گھر تک رہنی چاہیے، بینچز کی تشکیل پر اعتراض کرنے والے بتائیں کہ 15 سے 20 سال کیسے بینچ تشکیل دیئے گئے؟ وائس چیئرمین پاکستان بار کونسل ملک بھر کے وکلا کا نمائندہ ہوتا ہے، وائس چیئرمین پاکستان بار کونسل عہدے اور منصب کا خیال رکھیں، رجسٹرار سپریم کورٹ جانتا ہے کہ ذمہ داری کیسے ادا کرنی ہے، چند روز بعد چلا جاؤں گا،حق اور سچ کے مطابق ذمہ داری ادا کرنے کا موقع دیا جائے

جسٹس قاضی محمد امین نے کہا کہ سپریم کورٹ میں خاتون جج عائشہ اے ملک کی تقرری تاریخی اقدام ہے،7دہائی یہ سمجھنے میں لگ گئیں کہ صنف اعلیٰ عدلیہ میں تعیناتی کیلئے رکاوٹ نہیں میری اہلیہ اور پورے خاندان نے ہر اچھے برے وقت میں ساتھ نبھایا،ججز،اٹارنی جنرل اور بار نمائندگان کا اچھے الفاظ میں یاد کرنے پرمشکور ہوں

صدر سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن احسن بھون نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سینئر جج جسٹس قاضی فائز عیسی کے خط سے تاثر ملتا ہے کہ اعلی عدلیہ میں تقسیم کا عنصر موجود ہے امید ہے چیف جسٹس پاکستان عدلیہ کی تقسیم کا عنصر ختم کریں گے احسن بھون نے حضرت علیؓ کا ایک قول پڑھا "چھوٹی چھوٹی باتیں جن پر تم کڑہتے ہو یہی گھر بسانے کی باتیں ہوتی ہیں” کمرہ عدالت میں بیٹھے اکثر لوگوں کی طرح چیف جسٹس بھی مسکرا دیے !

سندھ میں گورنر راج کا وزیراعظم کو دیا گیا مشورہ

کس نے کہا گیم ختم ہوا ،ابھی تو شروع ہوا ہے ،وفاقی وزیر

حملہ ہوا تو اس کے خطرناک نتائج نکلیں گے ،تین سابق وزراء اعظم کا خط

وزیراعظم کی زیر صدارت سینئر وزراء کا اجلاس، ڈی چوک جلسے بارے بھی اہم مشاورت

ن لیگ کا بھی لانگ مارچ کا اعلان، مریم نواز کریں گی قیادت،ہدایات جاری

گورنر راج کا مشورہ دینے والے شیخ رشید دوردورتک نظر نہیں آئیں گے،اہم شخصیت کا دعویٰ

اپوزیشن اراکین سیکریٹری قومی اسمبلی کے دفتر پہنچ گئے

مریم اورنگزیب کو اسمبلی جانے سے روکا گیا،پولیس کی بھاری نفری تھی موجود

پی ٹی آئی اراکین واپس آ جائیں، شیخ رشید کی اپیل

پرویز الہیٰ سے پیپلزپارٹی کے رکن اسمبلی،بزدار سے ن لیگی رکن اسمبلی کی ملاقات

لوٹے لے کر پی ٹی آئی کارکنان سندھ ہاؤس پہنچ گئے

کرپشن مکاؤ کا نعرہ لگایا مگر…ایک اور ایم این اے نے وزیراعظم پر عدم اعتماد کا اظہار کر دیا

ہمارا ساتھ دو، خاتون رکن اسمبلی کو کیا آفر ہوئی؟ ویڈیو آ گئی

بریکنگ، وزیراعظم کیخلاف عدم اعتماد، قومی اسمبلی کا اجلاس طلب

آئین کے آرٹیکل 63 اے کی تشریح کے لیے ریفرنس، اٹارنی جنرل سپریم کورٹ پہنچ گئے

پیکا ترمیمی آرڈیننس کے خلاف درخواستوں پر سماعت ملتوی

کسی کو ووٹ دینے سے روکا نہیں جاسکتا،سپریم کورٹ

صدارتی ریفرنس کی سماعت کیلیے لارجر بینچ کی تشکیل ،جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کا چیف جسٹس کو خط