fbpx

لاہور میں خواتین سے زیادتی کے بڑھتے واقعات،ملزمہ کیا کرتی؟ تہلکہ خیز انکشاف

لاہور میں خواتین سے زیادتی کے بڑھتے واقعات،ملزمہ کیا کرتی؟ تہلکہ خیز انکشاف

ڈی آئی جی انویسٹی گیشن شارق جمال خان نے اپنے دفتر میں میڈیا نمائندوں سے گفتگو کی ہے، پریس کانفرنس میں ایس ایس پی انویسٹی گیشن کیپٹن(ر) منصور امان بھی شریک تھے.

ڈی آئی جی انویسٹی گیشن شارق جمال خان کا کہنا تھا کہ تھانہ گڑھی شاہو میں خاتون کو نوکری کا جھانسہ دے کر زیادتی کرنے کا مقدمہ حقائق کے برعکس نکلا، ملزمہ فاطمہ، ساتھی رزاق نے مدعیہ مقدمہ کی ڈیڑھ سالہ بیٹی کو زبردستی اغواء کیا،ملزمان نے مدعیہ سے زبردستی 15پر کال کروا کر زیادتی کا جھوٹا مقدمہ درج کروایا، گرفتار ملزمہ فاطمہ بی بی لوگوں کو بلیک میل کرنے کے لیے پہلے بھی 08 مقدمات درج کروا چکی ہے،

گجر پورہ میں 02 لڑکیوں سے زیادتی کرنیوالے تینوں ملزمان عرفان، ندیم اور عرفان پرویز گرفتار کئے گئے ہیں،ملزمان نے کرول گھاٹی کے قریب کارخانے میں لڑکیوں سے زیادتی کی تھی،ملزمان کا میڈیکل و DNA ٹیسٹ کرواکر میرٹ پر مقدمہ کو یکسو کیا جائے گا،ڈیفنس اے میں 12سالہ لڑکی کوزیادتی کا نشانہ بنانے والا ملزم اصغر گرفتار کر لیا گیا،مدعیہ خاتون کے سابقہ شوہر نے اس کی بیٹی کو زیادتی کا نشانہ بنایا تھا،

رائیونڈ سٹی میں نوکری کا جھانسہ دے کر خاتون سے زیادتی کا مقدمہ جھوٹا نکلا،مدعیہ نے 02نامعلوم لڑکوں کے خلاف زبردستی زیادتی کا جھوٹا مقدمہ درج کروایا تھا ،متاثرہ کے بیان کی روشنی میں مقدمہ جھوٹا اور بے بنیاد پایا گیا،

تھانہ سند ر میں نوکری دلوانے کا جھانسہ دے کر خاتون سے زیادتی کا مقدمہ درج کیا گیا،نامزد ملزم مقدمہ برضمانت عبوری پر ہے جبکہ مدعیہ نے نامعلوم ملزم کوتاحال نامزد نہ کیا ہےکچھ مدعیہ مقدمات پیشہ ور مقدمہ باز اور ریکارڈ یافتہ ملز مہ ہیں،جنہوں نے فرضی نام وشناختی کارڈ نمبرزپر زیادتی کے مقدمات درج کر وا رکھے ہیں، چند پیشہ ور مدعیہ متعدد مقدمات میں بطور ملزم خود بھی چالان ہو چکی ہیں،

ڈی آئی جی انویسٹی گیشن شارق جمال خان کا کہنا تھا کہ زیادتی کے مقدمات میں ملوث ملزمان کسی رعایت کے مستحق نہیں،خواتین کے جان و مال کی حفاظت پولیس کی اولین ترجیح ہے،

لاہور میں جنسی جرائم کے حوالہ سے گراف مسلسل بڑھتا جا رہا ہے آئے روز جنسی جرائم میں اضافے کی وجہ سے خواتین کا گھروں سے نکلنا محال ہو گیا ہے، پچھلے ایک ہفتے میں کم از کم دس سے زائد جنسی زیادتی کے واقعات لاہور میں رپورٹ ہو چکے ہیں،ایک اور نیا واقعہ سامنے آیا ہے، لاہور کے علاقے گڑھی شاہو میں رکشہ ڈرائیور نے اپنے دوستوں کے ہمراہ بندوق کی نوک پر خاتون کے ساتھ زیادتی کی ہے، پولیس نے خاتون کی درخواست پر مقدمہ درج کر لیا ہے

لاک ڈاؤن ختم کیا جائے، شوہر کے دن رات ہمبستری سے تنگ خاتون کا مطالبہ

لاک ڈاؤن، فاقوں سے تنگ بھارتی شہریوں نے ترنگے کو پاؤں تلے روند ڈالا

کرونا مریض اہم، شادی پھر بھی ہو سکتی ہے، خاتون ڈاکٹر شادی چھوڑ کر ہسپتال پہنچ گئی

کرونا لاک ڈاؤن، رات میں بچوں نے کیا کام شروع کر دیا؟ والدین ہوئے پریشان

پولیس اہلکار نے لڑکی کو منہ بولی بیٹی بنا کر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا، نازیبا ویڈیو بھی بنا لیں

نوجوان لڑکی سے چار افراد کی زیادتی کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد پولیس ان ایکشن

خاتون سے زیادتی اور زبردستی شادی کی کوشش کرنے والا ملزم گرفتار

واش روم استعمال کیا،آرڈر کیوں نہیں دیا؟گلوریا جینز مری کے ملازمین کا حاملہ خاتون پر تشدد،ملزمان گرفتار

کرونا میں مرد کو ہمبستری سے روکنا گناہ یا ثواب

لاہور میں زیادتی کیسز میں مسلسل اضافہ،نوکری کی بہانے خاتون کے ساتھ ہوٹل میں زیادتی

ماں بیٹی سے زیادتی کیس میں اہم پیشرفت سامنے آ گئی

لاہور میں رواں برس جنسی زیادتی کے 369 کیسز، کسی ایک ملزم کو بھی سزا نہ مل سکی

لاہور میں حوا کی دو اور بیٹیاں لٹ گئیں،اغوا کے بعد جنسی زیادتی

شوہر نے بھائی اور بھانجے کے ساتھ ملکر بیوی کے ساتھ ایسا کام کیا کہ سب گرفتار ہو گئے

لڑکیوں سے بڑھتے ہوئے زیادتی کے واقعات کی پنجاب اسمبلی میں بھی گونج

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!