ن لیگ اور پیپلز پارٹی کے بغیر چلے گی اب تحریک، مولانا نے ایک بار پھر تاریخ کا اعلان کردیا

0
31

ن لیگ اور پیپلز پارٹی کے بغیر چلے گی اب تحریک، مولانا نے ایک بار پھر تاریخ کا اعلان کردیا

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مولانا فضل الرحمان نے 19 مارچ کو لاہور میں آئین پاکستان تحفظ تحریک کے آغاز کا اعلان کر دیا،

متحدہ اپوزیشن کے اجلاس کے بعد مولانا فضل الرحمان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عوام کو اس طرح تنہا نہیں چھوڑیں گے ان کیلئے راستے بنائیں گے،عوام کو بیچ منجھدار میں چھوڑ دینا، گلہ شکوہ تو بنتا ہے،پیپلز پارٹی اور ن لیگ اپنے حجم کیساتھ تعاون کرتیں تو صورتحال مختلف ہوتی،عام آدمی کا مذاق اڑایا جا رہا ہے جو ناقابل برداشت ہے،

مولانا فضل الرحمان نے مزید کہا کہ ہم آزادی مارچ سے آگے بڑھنا چاہتے ہیں،19مارچ کو لاہور میں آئین پاکستان کانفرنس ہوگی،آئین جمہوریت کا تحفظ ،اسلامی تشخص کا تحفظ کریں گے،پاکستان کے دل لاہور سے آغاز کر رہے ہیں، عام آدمی کی زندگی اجیرن کر دی گئی ہے، منہگائی عروج پر ہے،عام آدمی کو آٹا نہیں مل رہا، صدر کہتے ہیں انہیں علم ہی نہیں کہ آٹا منہگا ہوگیا،ایک وزیر کہتے ہیں لوگ زیادہ کھاتے ہیں اس لیے آٹا ختم ہوگیا،ایک وزیر کہتے ہیں آدھی روٹی کھائیں،

مولانا فضل الرحمان کا مزید کہنا تھا کہ ترمیمی ایکٹس پر اپوزیشن کی جماعتوں نے حکومت کا ساتھ دیا،آئین جمہوریت کا تحفظ ،اسلامی تشخص کا تحفظ کریں گے،صدر کہتے ہیں انہیں علم ہی نہیں کہ آٹا منہگا ہوگیا عوام کو بیچ منجھدار میں چھوڑدینا ،گلہ شکوہ تو بنتاہے،

مولانا فضل الرحمان سے پریس کانفرنس میں صحافی نے سوال کیا کہ کیا آپ کو دی جانے والی یقین دہانیاں ختم ہو گئیں ہیں۔ جس پر مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ن اور پیپلز پارٹی نے مایوس کیا ہے۔ آرمی ایکٹ کو ووٹ دینے کے بعد اب وہ ہمارے ساتھ نہیں ہیں۔اگر یہ دونوں جماعتیں دیگر اپوزیشن کا ساتھ دیتیں تو آج حالات مختلف ہوتے۔

واضح رہے کہ مولانا فضل الرحمان نے اجلاس میں پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کو دعوت نہیں دی تھی ،ا ب جو تحریک چلائی جائے گی دونوں بڑی جماعتوں کے بغیر چلائی جائے گی.

آزادی مارچ کے موقع پر تنہا رہنے والے مولانا فضل الرحمان ایک بار پھر تنہا رہ گئے تھے، پیپلز پارٹی، مسلم لیگ ن نے مولانا فضل الرحمان کو ایک بار تنہا چھوڑ دیا تھ اب مولانا نے انہیں چھوڑنے کا فیصلہ کیا ہے، آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے حوالہ سے مولانا فضل الرحمان نے دعویٰ کیا تھا کہ موجودہ پارلیمنٹ جعلی ہے اور جعلی پارلیمنٹ قانون میں ترمیم نہیں کر سکتی ہم کسی صورت نہیں ہونے دیں گے

پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن نے بھی اس حوالہ سے بیانات دیئے تھے تا ہم اہم پیشرفت دیکھنے میں آئی جب حکومتی وفد نے بلاول زرداری اور مسلم لیگ ن کے اراکین سے ملاقات کی جس میں طے پایا کہ دونوں بڑی جماعتیں آرمی ایکٹ میں ترمیم کے حوالہ سے اسمبلی میں بل کی حمایت کریں گی اور دونوں جماعتوں نے مولانا کی خواہش کے برعکس بل کی حمایت کی تھی.

جیل جا کر بڑے بڑے سیدھے ہو جاتے ہیں، مریم نواز بھی جیل جا کر”شریف” بن گئیں

مریم نواز کی تاریخ پیدائش کیا ہے؟ عدالت نے پوچھا تو مریم نے کیا جواب دیا؟

پانچ کمپنیوں میں 19 کروڑ کی منتقلی،حمزہ شہباز نیب کو مطمئن نہ کر سکے

شہباز شریف کو لائف ٹائم ایوارڈ برائے کرپشن دیا جائے: شہباز گل

مریم نواز اور کیپٹن ر صفدر میں ہونے لگی ہے جلد جدائی،خبر سے کھلبلی مچ گئی

مریم نواز ایک بار پھر "امید” سے، کیپٹن ر صفدرخوشی سے نہال

دونوں اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے بل کی حمایت پر مولانا فضل الرحمان ان سے اندرون خانہ ناراض ہو چکے ہیں کہ مجھ سے مشاورت نہیں کی گئی ،ذمہ دار ذرائع کا کہنا ہے کہ مولانا فضل الرحمان نے بلاول زرداری سے رابطے کی کوشش کی لیکن رابطہ نہ ہو سکا، مولانا فضل الرحمان نے ن لیگ سے بھی رابطے کی کوشش کی لیکن ان سے بھی رابطہ نہ ہو سکا، مولانا ایک تو پارلیمنٹ سے باہر ہیں تو دوسری جانب اپوزیشن جماعتیں مسلسل مولانا کو دھوکے دے رہی ہیں، آزادی مارچ کے موقع پر بھی اسلام آباد بلا کر مولانا کو اکیلا چھوڑ دیا گیا، لاہور میں تو شہباز شریف گھر سے بھی نہیں نکلے تھے.

حریم شاہ کی دبئی میں کر رہے ہیں بھارتی پشت پناہی، مبشر لقمان نے کئے اہم انکشاف

حریم شاہ کو کریں گے بے نقاب، کھرا سچ کی ٹیم کا بندہ لڑکی کے گھر پہنچا تو اسکے والد نے کیا کہا؟

مبشر صاحب ،گند میں نہ پڑیں، ایس ایچ او نے حریم شاہ کے خلاف مقدمہ کی درخواست پر ایسا کیوں کہا؟

حریم شاہ مبشر لقمان کے جہاز تک کیسے پہنچی؟ حقائق مبشر لقمان سامنے لے آئے

حریم شاہ کے خلاف کھرا سچ کی تحقیقات میں کس کا نام بار بار سامنے آیا؟ مبشر لقمان کو فیاض الحسن چوہان نے اپروچ کر کے کیا کہا؟

Leave a reply