fbpx

بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں جنگی جرائم اور نسل کشی کے ثبوت مٹانا شروع کر دیئے

بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں کیے گئۓ جنگی جرائم اور نسل کشی کے ثبوت مٹانا شروع کر دیئے ہیں

فرانسیسی رسالے لی ایکسپریس میں شائع ھونے والی رپورٹ کیمطابق مقبوضہ کشمیر میں کچھ عرصے سے مقامی میڈیا کے سینکڑوں آن لائن آرکائیوز پُراسرار طور پر غائب ہو نا شُروع ھو گئے ہیں اور اِس کے ساتھ کئی دہائیوں کے تشدد اور جنگی جرائم کا ریکارڈ بھی۔ گریٹر کشمیر اخبار میں 2010 میں 16 سالہ اشتیاق احمد کے قتل کے بارے میں ایک مضمون کے لنک پر کلک کرنے سے یہ صفحہ "error 404″دکھاتا ھے۔ یہی سلوک کشمیر ریڈر کے ریکارڈ کے ساتھ ھُوا۔ سجاد احمد ڈار جو 2012 میں پولیس کی تحویل میں لینے کے بعد ہسپتال میں دم توڑ گۓ: کو سرچ کرنے پر یہ جواب آتا ھے "معذرت، آپ جس صفحہ کی تلاش کر رہے ہیں وہ اَب نہیں ہے”۔

سری نگر میں ایک اخبار کے چیف ایڈیٹر نے کہا کہ اس نے پہلے سوچا کہ یہ تکنیکی مسئلہ ہے۔▪️لیکن اپنے آن لائن آرکائیوز پر گہری نظر ڈالنے کے بعد انکشاف ھوا کہ جو معلومات غائب تھیں وہ زیادہ تر پچھلے کئ سالوں کی کشمیریوں کی بھارتی افواج کے ھاتھوں تشدد اور قتل و غارت گری کا احاطہ کرتی ہے جسکا مطلب ھے کہ کشمیر میں 2019 سے پہلے کچھ نہیں ہوا۔

کشمیر تکمیل پاکستان کا نامکمل ایجنڈہ، آخری حد تک جائیں گے، آرمی چیف کا دبنگ اعلان

یوم دفاع و شہداء، چلو شہداء کے گھر،باغی ٹی وی کی خصوصی کوریج

ہمارے شہدا ہمارے ہیرو ہیں،ترجمان پاک فوج کا راشد منہاس شہید کی برسی پر پیغام

سیکیورٹی خطرات کے خلاف ہم نے مکمل تیاری کر رکھی ہے، ترجمان پاک فوج

الیکشن پر کسی کو کوئی شک ہے تو….ترجمان پاک فوج نے اہم مشورہ دے دیا

فوج کو سیاست میں نہ گھسیٹا جائے ، دعا ہے علی سد پارہ خیریت سے ہو،ترجمان پاک فوج

طاقت کا استعمال صرف ریاست کی صوابدید ہے،آپریشن ردالفسار کے چار برس مکمل، ترجمان پاک فوج کی اہم بریفنگ

انسداد دہشت گردی جنگ تقریبا ختم ہو چکی،نیشنل امیچورشارٹ فلم فیسٹیول سے ڈی جی آئی ایس پی آر کا خطاب

افغان امن عمل، افغان فوج نے کہیں مزاحمت کی یا کرینگے یہ دیکھنا ہوگا، ترجمان پاک فوج

وطن کی مٹی گواہ رہنا، کے نام سے یوم دفاع وشہداء منانے کا اعلان

▪ زیادہ تر غائب کی گئ معلومات کا تعلق 2008، 2010 اور 2016 میں ہندوستانی گورنمنٹ کے خلاف بڑے مظاہروں سے ہے، جن میں 300 سے زاہد کشمیریوں کو بھارتی فورسز نے شھید کیا اور ہزاروں کو زخمی جن میں خواتین اور بچے بھی شامل تھے۔

▪ صحافیوں نے دعویٰ کیا ھے کہ بھارت نے وہ تمام مضامین اور رپورٹس جنمیں ہندوستانی سیکورٹی فورسز کی قتل، عصمت دری، تشدد اور دیگر جرائم شامل ھیں کو انسانی حقوق کی تنظیموں سے چُھپانے کیلے آرکائیوز سے ختم کرنے کا کام شُروع کر رکھا ھے ۔▪️ ” سجاد حیدر ، چیف ایڈیٹر روزنامہ کشمیر آبزرور نے کہا کہ ہماری رسائی کو کم کرنے اور ہمارے قارئین کو محدود کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں،” اور "یہ ایک بڑا چیلنج ہے۔”

ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں کبھی 250 سے زیادہ اخبارات کے ساتھ ایک متحرک پریس تھا، لیکن آج انکی تعداد گنتی کی رہ چکی ھے۔میڈیا کی خودمختاری اور آزادی سلب کرنے کے بعد ایڈیٹرز کا کہنا ہے کہ ان پر بھارتی حکام کی جانب سے تنقید روکنے کے لیے منظم دباؤ ڈالا گیا ہے۔صحافیوں کو انسداد دہشت گردی کے قوانین کے تحت گرفتار کیا گیا یا پولیس کی طرف سے بار بار طلب کیا گیا ہے تاکہ ان کی رپورٹنگ کے بارے میں پوچھ گچھ کی جائے۔دسمبر میں، حکام نے کشمیر انڈیپنڈنٹ پریس کلب کو بند کر دیا، جس نے پولیس کو ہراساں کرنے پر تنقید کی تھی۔ امریکی صحافی مائیکل کوگل مین نے کہا کہ آرکائیوز کا غائب ہونا نئی دہلی کی کشمیر پر بیانیہ کو کنٹرول کرنے کی مسلسل کوششوں کا حصہ لگتا ہے۔

قبل ازیں بھارتی حکومت کے مقبوضہ کشمیر میں جنگی جرائم پر لندن اسٹوک وائٹ لا فرم کی رپورٹ سامنے آ گئی ہے لندن اسٹوک وائٹ لا فرم نے 2 ہزار شہادتوں کو مدنظر رکھ کر رپورٹ تیار کی لندن اسٹوک وائٹ لا فرم نے 41 صفات پر مبنی رپورٹ ایک سال کی تحقیقات پر بنائی ،اسٹوک وائٹ کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بھارتی حکام نے اپنی فوج اور سیکیورٹی اداروں کے لیے استثنیٰ کی راہ ہموار کی ہے، مقبوضہ کشمیر میں بھارتی حکام واضح طور پر مسلح افراد کی حوصلہ افزائی کرتی ہے ،مقبوضہ کشمیر میں تشدد کے 450 کیسز رپورٹ ہوئے ،پیلٹ گن سے متاثرہ 1500 اور جبری گمشدگیوں کے100 کیسز ریکارڈ کئے گئے، مقبوضہ کشمیر میں جنسی ہراسگی کے 30 کیسز سامنے آئے ہیں استثنیٰ کلچر سے جنگی جرائم کے متاثرین کے لیے انصاف تک رسائی کا فقدان ہے، شہدا کے خاندان کو تدفین کے لیے رسائی نہیں دی جاتی،کیسز میں ماورائے عدالت قتل، تشدد، رات گئے بھارتی پولیس کے چھاپے بھی شامل ہیں بھارتی حکام نے اپنی فوج اور سیکیورٹی اداروں کے لیے استثنیٰ کی راہ ہموار کی ہے، مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی حکام واضح طور پر مسلح افراد کی حوصلہ افزائی کرتی ہے،

کشمیر یوتھ الائنس کا مقبول بٹ شہید کو خراج عقیدت،

مسئلہ کشمیر،توقع ہے بات چیت سے حل کرلیں گے ،وزیراعظم

کشمیر بنے گا پاکستان لیکن شمشیر کے ساتھ، حافظ سعد رضوی

پاکستان کا ہر جوان تحریک کشمیر کا ترجمان ہے،ورلڈ کالمسٹ کلب کے زیر اہتمام یکجہتی کشمیر سیمینار سے میاں اسلم اقبال کا خطاب

مودی مسلمانوں کا قاتل، کشمیر حق خودارادیت کے منتظر ہیں، صدر مملکت

یوم یکجہتی کشمیرپرتحریک آزادی بارے مفتیان نے کیا فتویٰ دیا؟ لیاقت بلوچ نے بتا دیا

کشمیر متنازعہ علاقہ، بھارت فوج بھیج سکتا ہے تو پاکستان کیوں نہیں؟ سراج الحق

تمام پارلیمانی فورموں پر مسئلہ کشمیر کو اجاگر کیا،سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر

ہماری امن پسندی کو کمزوری نہ سمجھا جائے، یوم یکجہتی کشمیر پر وزیر داخلہ کا پیغام

سینیٹ اجلاس،ہندو خاتون رکن نے کی صدارت ،کشمیریوں سے یکجہتی کی قرارداد منظور

بلوچستان میں دہشتگردی کے واقعات،بھارت کی معاونت تھی،ترجمان دفتر خارجہ

جی سی ویمن یونیورسٹی میں یوم یکجہتی کشمیرکی تقریب

یوم یکجہتی کشمیر، آرمی چیف کا کشمیریوں کے لئے پیغام

یوم یکجہتی کشمیر پر مولانا فضل الرحمان سی پیک کا افتتاح کرنے نکل پڑے

شہدا کو سلام،آزادی زیادہ دور نہیں،آصف زرداری، بلاول ،شہباز شریف

یوم یکجہتی کشمیر،الحمرا میں نمائش،ڈی سی آفس نے بھی نکالی ریلی

مقبوضہ کشمیر میں مظالم،برطانیہ میں بھارتی آرمی چیف، وزیر داخلہ کو گرفتار کرنے کی درخواست