طیارہ حادثہ، رپورٹ منظر عام پر آ گئی، وہی ہوا جس کا ڈر تھا، سنئے مبشر لقمان کی زبانی اہم انکشاف

0
155

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سینئر صحافی و اینکر پرسن مبشر لقمان نے کہا ہے کہ پی آئی اے کا جو جہاز لاہور سے کراچی جاتے ہوئے کریش ہو گیا تھا اسکی رپورٹ وزیراعظم کو پیش کر دی گئی ہے

مبشر لقمان کا کہنا تھا کہ پی آئی اے کے اس جہاز پر میں نے جتنے بھی وی لاگز کئے پہلے دن سے گزشتہ دو ہفتے تک، ان سب کو دیکھیں ، جو جو رپورٹ میں لکھا وہ وی لاگ میں سب پہلے بتا چکا ہوں،اور پہلے دن سے کچھ باتیں کر رہا ہوں وہ سب صحیح ثابت ہوئی ہیں ، پائلٹ کا تو قصور ہے ہی ہے، اس نے بھنڈ کیا، تیز سپیڈ میں تھا، کنٹرول نہیں کیا، جہاز رن وے کو ٹچ ہو گیا بغیر لینڈنگ کے، وہ اب نہیں ہے دنیا میں،اللہ ان کے لئے آسانیاں کرے اور سب کے لئے جو جہاز میں تھے

مبشر لقمان کا کہنا تھا کہ یہ جاتی ہے سول ایوی ایشن کے اوپر ساری بات، ابھی اس رپورٹ نے پی آئی اے اور سول ایوی ایشن دونوں کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے، پی آئی اے میں پائلٹ اور کو پائلٹ اور سول ایوی ایشن میں ایئر ٹریفک کنٹرول اور ایوی ایشن کے انتظامات کو براہ راست بلیم کر دیا کہ وہ ناکافی اور انٹرنیشنل ایس او پیز کے مطابق نہیں ہیں،میں کتنے عرصے سے کہہ رہا ہوں‌ کہ جب تک سول ایوی ایشن کو نہیں ادھیڑا جائے گا یہ ہوتا رہے گا

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ کیپٹن سجاد گل کو پی آئی اے کی سائیکاٹرسٹ ڈاکٹر عنیزہ نے ریجکٹ کر دیا تھا اور کہا تھا کہ یہ فلائٹ کے لئے صحیح نہیں ہیں اسکے بعد وہ باہر گئے اور سرٹفکیٹ لے آئے اس کی بنا پر پائلٹ بھرتی ہو گئے، پی آئی اے کی ڈاکٹر نے انہیں ریجیکٹ کر دیا تھا ، اب تو لگتا ہے کہ پی آئی اے کے جو سائیکاٹرسٹ ہیں وہ چائلڈ سائیکاٹرس ہیں ،انکو ایوی ایشن کا تجربہ ہی‌ نہیں‌ ہے،اس کی بھی تھقیقات ہونی چاہئے کہ کون لوگ ہیں وہ

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ ایئر ٹریفک کنٹرول کو اپنے اتھارٹیز کا پتہ نہیں تھا کہ روکنا ہے اوپر سے گو راؤنڈ کرنا ہے، ٹاور کے ہینڈ اوور کرنا تھا وہ نہیں کیا، بہت انکے بھنڈز تھے، اسکے بعد کیا ہوا جہاز ٹچ ہوا، جس کے بعد سیمی کریش لینڈنگ ہوئی اسکی ، اسکے پرزے ٹوٹ کر رن وے پر آگئے، جو انٹرنیشنل ایس او پیز ہیں اسکے مطابق ایئر ٹریفک کنٹرولر کو اسی وقت الگ کر دیا جاتا ہے،اسکے ٹیسٹ ہوتے ہیں کہ اسکے برین مین کیا ہے کیونکہ اس کی شفٹ میں حادثہ ہو گیا ہے لیکن انہوں نے اس سے پوری شفٹیں کروائیں،اور اس نے مزید اسی رن وے کو کلیئر نہین کیا، ٹوٹے ہوئے پرزے پڑے رہے اور اسی رن وے پر دو لینڈنگ کروا دیں، اگر جہاز میں اللہ نے کرے کہ رن وے پر جو پرزے پڑے تھے کچھ انجن میں چلا جاتا تو وہ بھی گیا

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ اب مجھے تو نہیں پتہ کہ کونسا پرزہ تھا وہاں، ایک جو پروٹوکول ہے اسکی بات کر رہا ہون، کہ رن وے کو سیل کیا جاتا ہے اور دوسرے رن وے کو استعمال کیا جاتا ہے، ریسکیو آپریشن میں سول ایوی ایشن اتھارٹی ٹوٹل مسنگ رہا،اب رپورٹ کہتی ہے کہ قومی ایئر لائن اور سول ایوی ایشن دونوں کو ذمہ دار قرار دیا، رپورٹ وزیراعظم کو پیش کروا دی گئی ہے، رپورٹ میں قومی ائیر لائن اور سی اے سے کو ذمہ دار ٹھہرایا گیا،اور حادثے کی روک تھام میں پی آئی اے اور سول ایوی ایشن کا طریقہ بھی ناکام ہے،

مبشر لقمان کا کہنا تھا کہ یہ بالکل صحیح ہے،ٹریننگ اور آؤت گوئنگ ٹریننگ اتنی کمزور ہے سول ایوی ایشن کی طرف سے ،کہ اب پی آئی اے کو چھوڑ دیں ، ایئر بلیو میں بھی ہو چکا ہے،بھوجا میں بھی ہو چکا ہے تو ساری ہی ایئر لائنز غلط ہیں اسکا مطلب ہے مادر شپ میں اصل گڑبڑ ہے جب تک اسکو ٹھیک نہیں کریں گے مسئلہ حل نہیں ہو گا، یہ بھی کہہ رہے ہیں کہ ہو سکتا ہے کہ ٹیکنیکل ایشو ہو اس پر بھی مزید جانچ پڑتا ل ہو رہی ہے،ہو سکتا ہے لینڈنگ گیئر میں کوئی ایشو ہو،کسی اور چیز میں پرابلم ہو، ہونے کو تو بہت کچھ ہو سکتا ہے تفصیل آ رہی ہے، ابتدائی رپورٹ مین پائلٹ اور ایئر ٹریفک کنٹرول دونوں کو ذمہ دار ٹھہرایا گیا

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ دوبارہ ٹیک آف کے دوران انجن فیل ہوئے دوبارہ ٹیک آف نہیں کرنا چاہئے تھا، پہلی بار ہی لینڈنگ کرنی تھی، 9 ہزار میٹر کا رن وے ہے، چار ہزار پر لینڈ کر رہا ہے تو اسے وہیں لینڈ کرنا چاہئے تھا کنٹرولر نے اسے پورا لیفٹ پر گھما دیا حالانکہ بالکل سامنے فیصل بیس تھی وہاں رن وے تھی، سترہ منٹ جو وہ فلائی کر رہا تھا وہ کرنے کی ضرورت نہین تھی ،سامنے ہی اتر جاتا فیصل بیس پر،وہ کہتے ہین کہ پائلٹ کو دوبارہ جہاز نہین اڑانا چاہئے تھا بالکل صحیح تھا

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ اس میں انہوں نے کہا کہ جہاز شروع سے ہی تیز رفتار اور اونچائی سے آ رہا تھا، لینڈنگ کے لئے بھی جہاز کی اونچائی زیادہ تھی، جہاز کے پرزے رن وے پر پڑے رہے، ایوی ایشن میں اتنے نالائق لوگ ہیں کہ ان پر جتنا بھی ماتم کر لیں کم ہے، ویسے بات کر لیں تو انگریزی بول بول کر دماغ خراب کر دیں گے،کراچی ایئر پورٹ پر پی آئی اے کے طیارے کی خصوصی جانچ پڑتال کی گئی پرزوں کی مزید ایگزامینشن بھی ہو رہی ہے، ایوی ایشن نے رپورٹ آنے سے پہلے رپورٹ دی اور کہا کہ پائلٹ ذمہ دار ہے ،گونگلوؤں سے انہوں نے مٹی جھاڑ دی، ریسکیو آپریشن میں ایوی ایشن کو دیکھیں ان پر کرمنل چارجز ہونے چاہئے، انہوں نے کسی زخمی کو ریسکیو نہیں کیا جو ان کی پرائمری جاب ہے، انہوں نے مے ڈے کی کال پر رن وے پر کوئی اور تیاری نہین کی جس پر وہ رن وے پر آ جاتا تو کیسے اتارنا تھا، آگر وہ آ بھی جاتا تو انکی تیاری بھی نہیں تھی

جنید جمشید سمیت 1099 لوگوں کی موت کا ذمہ دار کون؟ مبشر لقمان نے ثبوتوں کے ساتھ بھانڈا پھوڑ دیا

اے ٹی سی کی وائس ریکارڈنگ لیک،مگر کیسے؟ پائلٹ کے خلاف ایف آئی آر کیوں نہیں کاٹی؟ مبشر لقمان نے اٹھائے اہم سوالات

کراچی میں پی آئی اے طیارے کا حادثہ یا دہشت گردی؟ اہم انکشافات

طیارے کا کپتان جہاز اڑانے کے قابل نہیں تھا،مبشر لقمان کھرا سچ سامنے لے آئے

اگلی سپر پاور چین ہو گا، سینئر صحافی و اینکر پرسن مبشر لقمان کے اہم انکشافات

سول ایوی ایشن اتھارٹی ،طیارہ حادثات میں مرنیوالوں کا قاتل کون؟ ہم نہیں چھوڑیں گے، مبشر لقمان کا دبنگ اعلان

وہ قوم جو ہر سال 200 ارب جلا ڈالتی ہے، سنیے سینئر اینکر پرسن مبشر لقمان کی زبانی

جہازکریش، حقائق مت چھپاؤ ، جواب دو، مبشر لقمان کا پالپا کو کھلا چیلنج

کاش. پی آئی اے والے یہ کام کر لیتے تو PK8303 کا حادثہ نہ ہوتا، سنیے مبشر لقمان کی زبانی اہم انکشافات

ماشاء اللہ، پی آئی اے کے پائلٹ ماضی میں کیا کیا گل کھلاتے رہے ؟سنئے مبشر لقمان کی زبانی

سول ایوی ایشن نے گونگلوؤں سے مٹی جھاڑ دی،پائلٹ کوذمہ دار ٹھہرانے کا لیٹر کیوں جاری کیا گیا؟ سنئے مبشر لقمان کی زبانی

طیارہ حادثہ،ابتدائی رپورٹ اسمبلی میں پیش، تحقیقاتی کمیٹی میں توسیع کا فیصلہ،پائلٹس کی ڈگریاں بھی ہوں گی چیک

طیارہ حادثہ، تحقیقات کے لئے جے آئی ٹی تشکیل

لاشوں کی شناخت ،طیارہ حادثہ میں مرنیوالے کے لواحقین پھٹ پڑے،بڑا مطالبہ کر دیا

کراچی طیارہ حادثہ،طیارہ ساز کمپنی ایئر بس نے ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ جاری کر دی

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ اس بات کی تحقیقات ہونی چاہئے کہ سول ایوی ایشن نے ایئر پورٹس کی جو زمین تھی اس کو بیچ بیچ کر گھر بنوا دیئے ہیں،ہزاروں کی تعداد میں لاہور،کراچی، اسلام آباد میں ایسا ہے، اگر رات میں کوئی جہاز آتا ہے تو برڈ ہٹ ہو جاتا ہے، انکے پروٹوکول، انکی ٹریننگ، انکی ای ویلیو ایشن سب میں فقدان ہے، ایوی ایشن میں جو اوپر سے لوگ آئے ہوئے ہیں وہ اس قابل نہین کہ ساری چیزوں کو دیکھیں ،وہ صرف نعرے مارتے رہتے ہیں،

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ جو آدمی جانتا ہے ایوی ایشن کو ، جب تک وہ ٹریننگ نہین لیتا، نئے سرے سے سٹڈی نہیں کرتا، پروسیجرز سے نہیں گزرتا تو وہ قابل ہی نہیں، جس کو ایڈمنسٹریشن کا پتہ نہین انکو لگایا ہے، کمرشل ایوی ایشن کے پروسیجرز وہ کیسے کرے گا، اوپر کے لوگوں کو ایوی ایشن سے نکالنا پڑے گا، ایوی ایشن پر چیکز ہونے چاہئے، ایئر لائن کا قصور سیکنڈری ہے، اس پر میری مزید تحقیق جاری ہے،اور میں اس پر بہت کچھ لانے والا ہوں

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ پالپا والو، اتنا مجھے طعنے دیتے ہیں کہ مین کیا نام لوں، اسکا ویٹ کرو، اسکا ویٹ کرو، اب آ گئی رپورٹ، ٹھنڈ پڑ گئی، میں نے صحیح کہا تھا،وہ سچ نکل آیا، وہ کپتان جس سے وی لاگ کروا رہے تھے وہ اپنا کروبار کر رہے تھے، پی آئی اے میں سفارشوں، سیاسی بنیادوں پر لوگ آئے ہوئے ہیں، نان کوالیفائیڈ لوگ آئے ہین اور چور لوگ آئے ہوئے ہیں جنکی ڈگریاں جعلی ہیں، پی آئی اے میں بھی اب بڑے لیول پر چھانٹی کرنا پڑے گی،

امریکہ کو چین کے ہاتھوں شکست، کیا نیو ورلڈ آرڈر تبدیل ہونے جا رہا؟ سنئے مبشر لقمان کی زبانی اہم انکشافات

Leave a reply